Sunday, March 18, 2012

فرہنگ آصفیہ مفت میں



فرہنگ آصفیہ اردو کی امہات لغات میں سے ایک ہے ۔ جس کے مرتب مولف سید احمد دہلوی صاحب ہیں ۔ انہوں نے 1326 ھجری بمطابق 1908 میں اسے منظر عام پر لایا ۔ انتہائی محنت وجانفشانی اور عرق ریزی کے ساتھ انہوں نے اسے مرتب کیا جسے انہوں نے خود اپنے الفاظ میں یوں بیان کیا ہے ۔ 
"بندہ سید احمد ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ نے اپنی لگاتار تیس برس کی شبانہ روز محنت وصرف کثیر سے (اسے مرتب کیا )" 
نیز انہوں نے اپنی اس کوشش کو نظام حیدرآباد دکن کے نام سے معنون کیا اور اس کے بدلے ان کی جو قدر دانی کی گئی ان کے اپنے الفاظ میں ۔
" چناچہ حضور انور دام اقبالہ وعم نوالہ نے وہ قدر دانی فرمائی کی مبلغ پانچ ہزار کلدار کے انعام اور چارسو جلدوں کی خریداری کے علاوہ پچاس روپے ماہوار کا وظیفہ بھی تاحیات مولف مرحمت کیا "۔
یہ تھا اس کتاب کا مختصر تعارف ۔ بقیہ اہل ذوق کتاب میں ملاحظہ کرلیں ۔
یہ ضخیم کتاب چارجلدوں میں پی ڈی ایف کی صورت میں دنیائے انٹرنیٹ پر موجود ہے اور کافی عرصے سے اہل ذوق اس کو محفوظ کرکے اس سے استفادی کررہے ہیں ۔ ہم  اپنے احباب کے لیے اس کا لنگ یہاں بانٹ رہے  سو جو حاصل کرنا چاہے حاصل کرلے ۔ ممکن ہے انٹرنیٹ سے اتارنے میں مشکل ہو ۔لیکن کوشش جاری رکھیے گا ان شاء اللہ کامیاب ہوں گے ۔ 

No comments: